اپنی تحریری مہارتوں کو بہتر بنانے میں مدد کیلئے ان آسان ہدایات پر عمل کریں۔ اگر آپ بصری متعلم ہیں، تو تحریری مشق 2 میں بینڈ 7 کی سمت 7 مراحل پر اتنی ہی معلوماتی ویڈیو کیلئے صفحے کے نچلے حصے پر جائیں۔ 

مرحلہ 1: سوال کے تمام حصوں کا جواب دیں

IELTS تحریری مشق 2 آپ سے تقاضہ کرتی ہے کہ کسی بیان، یا تمہید کے جواب میں ایک مضمون لکھیں۔ آپ کیلئے لازمی ہے کہ سوال کو غور سے پڑھیں تاکہ تمام حصوں کا جواب مل سکے۔ مثال کے طور پر، نیچے دیئے گئے سوال میں، آپ کو اعلی بینڈ کے حصول کیلئے 3 چیزیں کرنی ضروری ہیں، ممتحن کو یہ دکھائیں کہ آپ کام کے تمام حصے حل کر رہے ہیں۔ 

  1. ایک نظریہ پیش کریں 

  2. دوسرا نظریہ پیش کریں 

  3. اپنی رائے پیش کریں 


نمونہ سوال:  

کچھ لوگوں کا خیال ہے کہ جنگلی جانوروں کو چڑیا گھر میں نہیں رکھا جانا چاہیئے۔ کچھ لوگوں کا خیال ہے کہ چڑیا گھر کا ہونا کچھ اچھی وجوہات کا حامل ہے۔

دونوں خیالات پر تبادلۂ خیال کریں اور اپنی رائے دیں۔ 


پیش کریں ایک نظریہ اور پھر دیگر نظریہ، اور پھر اپنی رائے پیش کریں

جنگلی جانوروں کو پوری دنیا میں چڑیا گھروں میں رکھا جاتا ہے۔ اس وقت چڑیا گھر بہت سارے ممالک میں سیاحوں کی توجہ کا مرکز ہے اور زائرین کو راغب کرنے کیلئے جنگلی جانوروں کی ضرورت ہے۔ مجھے لگتا ہے کہ جنگلی مخلوق کو چڑیا گھر میں نہیں رکھا جانا چاہیئے اور ان کو دیکھنے کے متبادل طریقے موجود ہونے چاہئیں۔  

ہمارے شہروں میں چڑیا گھر ہونے کی بہت سی اچھی وجوہات ہیں۔ سب سے زیادہ اہم بات یہ ہے کہ وہ زیادہ سیاحوں کو متوجہ کرتے ہیں اور شہر کیلئے رقم کماتے ہیں۔ زائرین کو ایسے جنگلی جانوروں کو دیکھنے کا موقع ملتا ہے جن کو دیکھنے کیلئے انہیں بہت دور تک سفر کرنا پڑ سکتا ہے۔ نایاب نسلیں، جیسے چینی پانڈا، یا ہندوستانی شیر، یا مثال کے طور پر، افریقی گینڈے خطرے سے دوچار ہیں اور اگر ہمارے پاس چڑیا گھر نہ ہوتا تو وہ مرجاتے۔ چڑیا گھر ان جانوروں کی دیکھ بھال کرتے ہیں اور ہمیں ان کو دیکھنے کا موقع فراہم کرتے ہیں۔ لہذا، ہم چڑیا گھروں کی تعلیمی اہمیت کو کم نہیں سمجھ سکتے ہیں۔  

تاہم، بہت سے لوگوں کو لگتا ہے کہ جنگلی جانوروں کو آزاد ہونا چاہیئے۔ چڑیا گھر میں انہیں پنجروں اور چھوٹے علاقوں میں نہیں رکھا جانا چاہیئے۔ یہ جانوروں پر ظلم ہے اور وہ اکثر اس وجہ سے مر جاتے ہیں کہ وہ قدرتی رہائش گاہ میں نہیں رہتے ہیں۔ ہم اکثر ایسی خبریں دیکھتے ہیں کہ چڑیا گھروں میں نایاب جانور مر رہے ہیں یا بیمار پڑ رہے ہیں کیونکہ یہ علاقہ شیر یا بھالو جیسے جنگلی جانوروں کیلئے زیادہ بڑا یا مناسب نہیں ہے۔ نیز، یہ جانور ناخوش ہیں اور بعض اوقات انسانوں پر حملہ کرتے ہیں۔ جنگلی جانوروں کو پنجروں میں قید رکھنا جانوروں کیلئے غیر صحت بخش ہے اور یہ ظالمانہ عمل ہے۔ 

دونوں خیالات نے درست نکات پیش کیے، تاہم، مجھے پختہ یقین ہے کہ چڑیا گھر جنگلی جانوروں کی کوئی جگہ نہیں ہے۔ اگر جانوروں کی دیکھ بھال کرنے کی ضرورت ہو تو، گيم پارک یا جنگلی رہائش کے اندر قدرتی رہائش میں ان کی دیکھ بھال کی جانی چاہیئے۔ حکومتوں کو اپنے ملک میں قیمتی جنگلی جانوروں کی دیکھ بھال کرنی چاہیئے اور ان چڑیا گھروں کو بند کرنا چاہیئے جو ان سے فائدہ اٹھاتے ہیں۔ 

آخر میں، اگرچہ لوگ سمجھتے ہیں کہ چڑیا گھر جنگلی جانوروں کو رکھنے کیلئے اچھی جگہیں ہیں کیونکہ وہ پیسہ کما سکتے ہیں اور لوگوں کو تعلیم دے سکتے ہیں، لیکن مجھے لگتا ہے کہ ہمیں اب چڑیا گھروں کی ضرورت نہیں ہے۔ ہم انٹرنیٹ پر جنگلی جانوروں کو دیکھ سکتے ہیں اور یہ جان کر خوشی محسوس کر سکتے ہیں کہ وہ آزاد ہیں۔ 

مرحلہ 2: ایک واضح مؤقف پیش کریں

اگرچہ آپ اپنے مضمون میں مختلف نقط نظر پیش کررہے ہیں، لیکن آپ کو ایک واضح مؤقف پیش کرنا ہوگا۔ اس کا سیدھا مطلب یہ ہے کہ آپ نے ممتحن کو یہ بتانا ہوگا کہ آپ کا سوال کے بارے میں کیا خیال ہے۔ مکمل مضمون کیلئے آپ کا مؤقف واضح ہونا چاہیئے۔ اختتام پر اپنا ذہن نہ بدلیں۔ 

  • دونوں نظریات نے معقول نکات پیش کیے ہیں، تاہم، مجھے پختہ یقین ہے کہ ... 

  • البتہ، بہت سے لوگوں کو یہ محسوس ہوتا ہے کہ ... 

  • میرا ماننا ہے کہ جنگلی مخلوقات کو چڑیا گھروں میں نہیں رکھا جانا چاہیئے ... 

مرحلہ 3: اپنا مضمون ترتیب دیں

یہ ضروری نہیں کہ مضمون نگاری ایک مشکل کارنامہ ہو۔ ہر خیال کو پیش کرنے اور تیار کرنے کیلئے پیراگراف کا استعمال کرکے اپنے خیالات کو منظم انداز میں پیش کریں۔ اپنے مضمون کی تشکیل میں مدد کرنے کیلئے درج ذیل نکات کا استعمال کریں۔ 

  • قاری کو دکھائیں کہ تعارفی پیراگراف کے ساتھ کہاں سے شروع کرنا ہے۔  

  • ان خیالات کو پیش کریں جو اہم ہیں اور پھر، ان کو مزید تفصیل سے بتائیں۔  

  • سوال پر اپنی رائے کے ساتھ مضمون کا اختتام کریں۔  

  • ہر پیراگراف کے اندر ایک واضح آئیڈیا تیار کریں۔  

  • ہر پیراگراف کے مابین جگہ چھوڑ کر ممتحن کیلئے آسان بنائیں۔  

مضمون کی مثال 

تعارف 

جنگلی جانوروں کو پوری دنیا میں چڑیا گھروں میں رکھا جاتا ہے۔ اس وقت چڑیا گھر بہت سارے ممالک میں سیاحوں کی توجہ کا مرکز ہے اور زائرین کو راغب کرنے کیلئے جنگلی جانوروں کی ضرورت ہے۔ مجھے لگتا ہے کہ جنگلی مخلوق کو چڑیا گھر میں نہیں رکھا جانا چاہیئے اور ان کو دیکھنے کے متبادل طریقے موجود ہونے چاہئیں۔ 

پہلا نظریہ 

ہمارے شہروں میں چڑیا گھر ہونے کی بہت سی اچھی وجوہات ہیں۔ سب سے زیادہ اہم بات یہ ہے کہ وہ زیادہ سیاحوں کو متوجہ کرتے ہیں اور شہر کیلئے رقم کماتے ہیں۔ زائرین کو ایسے جنگلی جانوروں کو دیکھنے کا موقع ملتا ہے جن کو دیکھنے کیلئے انہیں بہت دور تک سفر کرنا پڑ سکتا ہے۔ نایاب نسلیں، جیسے چینی پانڈا، یا ہندوستانی شیر، یا مثال کے طور پر، افریقی گینڈے خطرے سے دوچار ہیں اور اگر ہمارے پاس چڑیا گھر نہ ہوتا تو وہ مرجاتے۔ چڑیا گھر ان جانوروں کی دیکھ بھال کرتے ہیں اور ہمیں ان کو دیکھنے کا موقع فراہم کرتے ہیں۔ لہذا، ہم چڑیا گھروں کی تعلیمی اہمیت کو کم نہیں سمجھ سکتے ہیں۔ 

دوسرا نظریہ 

تاہم، بہت سے لوگوں کو لگتا ہے کہ جنگلی جانوروں کو آزاد ہونا چاہیئے۔ چڑیا گھر میں انہیں پنجروں اور چھوٹے علاقوں میں نہیں رکھا جانا چاہیئے۔ یہ جانوروں پر ظلم ہے اور وہ اکثر اس وجہ سے مر جاتے ہیں کہ وہ قدرتی رہائش گاہ میں نہیں رہتے ہیں۔ ہم اکثر ایسی خبریں دیکھتے ہیں کہ چڑیا گھروں میں نایاب جانور مر رہے ہیں یا بیمار پڑ رہے ہیں کیونکہ یہ علاقہ شیر یا بھالو جیسے جنگلی جانوروں کیلئے زیادہ بڑا یا مناسب نہیں ہے۔ نیز، یہ جانور ناخوش ہیں اور بعض اوقات انسانوں پر حملہ کرتے ہیں۔ جنگلی جانوروں کو پنجروں میں قید رکھنا جانوروں کیلئے غیر صحت بخش ہے اور یہ ظالمانہ عمل ہے۔  

میری رائے 

دونوں خیالات نے درست نکات پیش کیے، تاہم، مجھے پختہ یقین ہے کہ چڑیا گھر جنگلی جانوروں کی کوئی جگہ نہیں ہے۔ اگر جانوروں کی دیکھ بھال کرنے کی ضرورت ہو تو، گيم پارک یا جنگلی رہائش کے اندر قدرتی رہائش میں ان کی دیکھ بھال کی جانی چاہیئے۔ حکومتوں کو اپنے ملک میں قیمتی جنگلی جانوروں کی دیکھ بھال کرنی چاہیئے اور ان چڑیا گھروں کو بند کرنا چاہیئے جو ان سے فائدہ اٹھاتے ہیں۔ 

نتیجہ 

آخر میں، اگرچہ لوگ سمجھتے ہیں کہ چڑیا گھر جنگلی جانوروں کو رکھنے کیلئے اچھی جگہیں ہیں کیونکہ وہ پیسہ کما سکتے ہیں اور لوگوں کو تعلیم دے سکتے ہیں، لیکن مجھے لگتا ہے کہ ہمیں اب چڑیا گھروں کی ضرورت نہیں ہے۔ جہاں تک میرا تعلق ہے، جنگلی جانوروں کو آزاد کردیا جانا چاہیئے۔ 

مرحلہ 4: لنکنگ ڈیوائسز کا استعمال کریں

لنکنگ ڈیوائس یا ٹرانزیشن الفاظ وہ الفاظ اور ارتباطی الفاظ ہیں جو آپ کے جواب کی پیوستگی کرتے ہیں۔ یہ ایسا گوند ہے جو آپ کے جملے اور نظریات کو ایک ساتھ چپکاتا ہے۔ نیچے دیئے گئے جدول میں کچھ لنکرز دکھائے گئے ہیں جو مضامین میں کثرت سے استعمال ہوتے ہیں۔ 

ایک طرفجبکہ
اور دوسری طرفکیونکہ
پہلےاسی طرح
ایک اورآخر کار
تاہمبہر حال
کے باوجوداس کے نتیجے میں
اگرچہخلاصۂ کلام
قطع نظراس کے علاوہ
مثال کے طور پراس کے نتیجے میں
لہذابلاشبہ

مرحلہ 5: ذخیرۂ الفاظ کے ایک رینج کا استعمال کریں

تحریر اپنے خیالات اور نظریات کو قاری تک پہنچانے کا ایک ذریعہ ہے۔ لہذا، ایسے ذخیرۂ الفاظ کا استعمال کریں جو سمجھنے میں آسان ہو۔ نیز، صرف ان الفاظ کا استعمال کریں جن کے ہجے آپ آسانی سے کر سکتے ہوں۔ اپنے مضمون میں الفاظ کو قدرتی لحاظ سے ساتھ – ترتیب وار استعمال کریں اور بامحاورہ زبان/فعل اورمتعلق فعل (phrasal verbs) شامل کریں۔ اس سے ممتحن کے سامنے یہ ثابت ہوتا ہے کہ آپ ذخیرۂ الفاظ کے ایک رینج کا استعمال کرسکتے ہیں۔ اور آخر میں، اپنا تحریری کام مکمل کرلینے کے بعد ہجے کی غلطیوں اور ٹائپ کی غلطیوں کو چیک کریں۔ 

ترتیب بندی کی مثال: 

  • Tourist attraction  

  • Alternate ways  

  • Rare species  

  • Natural habitat  

بامحاورہ زبان اور فعل اورمتعلق فعل کی مثالیں: 

  • To be cared for  

  • Close down  

  • Make money  

  • Chance to see  

  • Looked after

مرحلہ 6: وسیع پیمانے پر قواعد کے ڈھانچوں کا درست استعمال کریں

جب آپ بینڈ 7 کا نشانہ رکھتے ہیں تو، آپ کو آسان اور پیچیدہ جملے دونوں میں مہارت حاصل کرنے کی ضرورت ہوتی ہے۔ اور یاد رکھیں کہ آپ کو کافی سارے غلطی سے پاک جملے بھی بنانے ہوں گے۔ تو، آپ کا کیا خیال ہے کہ آپ اس کو کیسے حاصل کرسکتے ہیں؟ جی ہاں، مشق کے ساتھ۔ نمونہ ٹیسٹ کے پرچے آزمائیں اور ان غلطیوں کا تجزیہ کریں جو آپ عام طور پر کرتے ہیں۔ جب آپ جملے کے مختلف ڈھانچوں کی مشق کرتے رہتے ہیں، تو ہمیں یقین ہے کہ آپ کسی بھی موضوع پر مضمون لکھنے میں بہتری لائیں گے۔ 

قواعد کے ڈھانچوں کی مثالیں

مضامین سب سے اہم بات یہ کہ وہ سیاحوں کو راغب کرتے ہیں اور شہر کیلئے رقم کماتے ہیں؛ زائرین کو (ایک) موقع ملتا ہے
فاعل/فعل کی مطابقت کیونکہ وہ قدرتی نہیں ہیں
حرف ربط ان کے ملک میں جنگلی جانور
جمع ہم اکثر خبر والی کہانی (کہانیاں) دیکھتے ہیں
رموز اوقاف سب سے اہم بات یہ ہے کہ وہ زیادہ سیاحوں کو متوجہ کرتے ہیں اور شہر کیلئے رقم کماتے ہیں۔

مرحلہ 7: اپنے مضمون کو اچھی طرح سے چیک کریں

یہاں تک کہ اگر آپ ایک بہترین مضمون تیار کرتے ہیں تو، آپ لاپرواہی سے ہجے اور قواعد کی غلطیاں کرسکتے ہیں۔ اگر آپ اپنے مضمون کو اچھی طرح سے جانچتے ہیں تو ان کو آسانی سے دور کیا جا سکتا ہے۔ اپنے تحریری کام کو مکمل کرنے کے بعد خود سے درج ذیل سوالات پوچھیں۔ 

  • کیا میں نے تمام حصوں کا جواب دیا؟ 

  • کیا میں نے پیراگرافس کا استعمال کیا؟ 

  • کیا میں نے لنکرز استعمال کیے؟ 

  • کیا میں نے رموز و اوقاف کا استعمال کیا؟ 

  • کیا میں نے اپنا کام چیک کیا؟ 

  • کیا میری ہجے درست ہے اور کیا میں نے ذخیرۂ الفاظ کے ایک رینج کا استعمال کیا؟ 

  • کیا میں نے جملے کے پیچیدہ ڈھانچے کا استعمال کیا؟ 

جب آپ ان سوالات کا مثبت میں جواب دے سکتے ہیں، تو آپ یقیناً ایک بینڈ 7 کے اسکور کی راہ پر گامزن ہیں! 

Improve IELTS Writing score

While improving your IELTS score entirely depends on your capacity and dedication, choosing the right resources also plays an important role. To make it easy for you, IDP has launched IELTS Prepareexternal icon: ielts.idp.com/prepare: a one-stop-shop for all official IDP IELTS preparation materials including Writing. 

7 کا بینڈ پانے میں مدد کے 7 اقدامات: IELTS تحریری مشق 2

ہمارے IELTS ماہر سے ان 7 اقدامات کے بارے میں جانیں جو IELTS کے تحریری مشق 2 میں 7 کا بینڈ پانے کیلئے ضروری ہیں۔

https://images.ctfassets.net/unrdeg6se4ke/3M3l9IIwLIWYUmlk0zGXKT/caf080427ffd75e32263c97efd5c9090/7_Steps_to_help_you_reach_a_Band_7_IELTS_Writing_Task_2_-_thumbnail__high_res_.jpg
2021-07-05T14:17:04.202Z
https://videos.ctfassets.net/unrdeg6se4ke/7lrrXVkiRsfRm1HHJzqtoO/118304a149e8fc73484904f0ab858633/7_Steps_to_help_you_reach_a_Band_7__IELTS_Writing_Task.mp4